سب کو خوش کرنے کے چکر میں شہباز کابینہ کیلئے وزارتیں کم پڑ گئیں۔۔۔ 8 22

سب کو خوش کرنے کے چکر میں شہباز کابینہ کیلئے وزارتیں کم پڑ گئیں۔۔۔

حکومتی اتحاد کی تمام جماعتوں کو ایڈجسٹ کرنے کے چکر میں وفاقی کابینہ کے ارکان کی تعداد بڑھ کر 61 تک پہنچ گئی،

جس میں وفاقی وزیر زیادہ ہونے کی وجہ سے وزارتیں کم پڑ گئیں۔

عمران خان کی کابینہ میں زیادہ ارکان کی تعداد پر اس وقت کے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کفایت شعاری کا درس دیا کرتے تھے،

مزید برآں کچھ عرصہ قبل بھی وزیر اعظم شہباز شریف نے اعلان کیا تھا کہ کفایت شعاری اقدامات کے تحت کابینہ میں مزید توسیع نہیں کی جائے گی،

لیکن کابینہ میں اضافے کا سلسلہ جاری رہا،

اب مزید اضافہ کرتے ہوئے ملک احمد خان، روبینہ عرفان اور ملک عبد الغفار ڈوگر کو وزیراعظم کا معاون خصوصی تعینات کیا جس کے بعد کابینہ کی تعداد بڑھ کر 61 تک پہنچ گئی،

اس وقت کابینہ میں وفاقی وزیر 34 اور وفاقی وزارتوں کی تعداد 33 ہے

وزیر اعظم کے معاونین خصوصی کی تعداد بڑھ کر 16 ہوگئی اور صرف 3 کے پاس قلمدان ہیں اور باقی ماندہ 13معاونین خصوصی کے پاس کوئی قلمدان ہی نہیں،

وزرائے مملکت 7 اور مشیروں کی تعداد 4 ہے،

جاوید لطیف کئی ماہ سے بغیر کسی قلمدان کے وفاقی وزیر ہی، وزارت نہ ہونے کے باعث چوہدری سالک حسین کو سرمایہ کاری بورڈ کا قلمدان دیا گیا۔

بطور وزیر اعظم عمران خان کی سبکدوشی کے وقت 25 وفاقی وزراء، وزرائے مملکت اور مشیروں کی تعداد 4، 4 اور معاونین خصوصی 19تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں